Myntra coupons

Flipkart coupon

abof coupons

globalnin

Home / Desi Beauty Tips / ’اس قدرتی چیز کا تیل اپنے جسم پر لگائیں تو جوڑوں کی تمام دردیں دور ہوجائیں گی‘

’اس قدرتی چیز کا تیل اپنے جسم پر لگائیں تو جوڑوں کی تمام دردیں دور ہوجائیں گی‘

ناریل کا تیل اپنی غذائی افادیت کے باعث صدیوں سے مشرقی باورچی خانے کی زینت رہا ہے لیکن دیسی ادویات اور جڑی بوٹیوں پر تحقیق کرنے والی ماہر ڈاکٹر پریانکا سامپت نے اس تیل کے ایسے ایسے طبی فوائد بتائے ہیں کہ جان کر یقیناً آپ حیران رہ جائیں گے۔ انہوں نے ناریل کے تیل کو جلد اور بالوں کے مسائل سے لے کر جوڑوں، ہڈیوں اور دل کی بیماری تک کا آسان حل بتایا ہے۔

ہڈیوں اور جوڑوں کے مسائل کی بات کی جائے تو ڈاکٹر پریانکا کہتی ہیں کہ ان مسائل سے پریشان افراد کو ناریل کے تیل سے ضرور مستفید ہونا چاہیے۔ درد کے مقام پر ناریل کے تیل کا مساج کرنے سے جلد ہی افاقہ محسو س ہونے لگتا ہے اور باقاعدگی سے اس کا استعمال جاری رکھنے سے مریض کی زندگی آسان ہو جاتی ہے۔ اس کی وجہ یہ بتائی گئی ہے کہ ناریل کا تیل کیلشیم اور میگنیشیم کو ہڈیوں میں جذب ہونے میں مدد دیتا ہے جس کا فوری فائدہ یہ ہے کہ درد میں کمی محسوس ہوتی ہے اور طویل المدتی فائدہ یہ ہے کہ ہڈیاں مضبوط ہو جاتی ہیں۔

دانتوں اور مسوڑھوں کی صحت کیلئے بھی ناریل کے تیل کو بہت فائدہ مند بتایا گیا ہے۔ اس کیلئے ضروری ہے کہ چند منٹ کے لئے اس تیل کی کلی کریں، یعنی تیل کو فوری طور پر باہر مت پھینکیں بلکہ یہ چند منٹ تک منہ میں رہنا چاہئیے۔ اس سے ناصرف دانتوں کی صفائی ہوتی ہے بلکہ منہ میں موجود بیکٹیریا کا بھی خاتمہ ہوجاتا ہے۔

جلد کی خشکی، خارش وغیرہ کیلئے بھی یہ تیل بہت مفید ہے، اور اگر آپ کے ہونٹ خشک ہوجاتے ہیں تو ان پر بھی ناریل کا تیل استعمال کریں۔ بالوں کیلئے بھی ناریل کا تیل بہت مفید ہے۔ یہ ان میں توانائی اور چمک پید اکرتا ہے۔ ناریل کے تیل سے سر میں تقریباً پانچ منٹ کیلئے مساج کرنا چاہیے۔ باقاعدگی سے ناریل کے تیل کا مساج کرنے سے خشکی کا مسئلہ پیدا نہیں ہوتا۔

وزن کم کرنے کے خواہشمند بھی جان لیں کہ تازہ ناریل کے تیل میں میڈیم چین فیٹی ایسڈ دیگر اقسام کے تیل کی نسبت 70 سے 85 فیصد زیادہ ہوتے ہیں۔ یہ فیٹی ایسڈ لونگ چین فیٹی ایسڈ کی طرح عضلات میں ذخیرہ نہیں ہوتے ہیں اور اس طرح ناریل کے تیل کا استعمال وزن کم کرنے کیلئے بھی مفید ثابت ہوتا ہے۔

ناریل کے تیل میں پائے جانے والے لارک ایسڈ اور کیپرک ایسڈ طاقتور اینٹی مائیکروبیل اجزاءہیں۔ یہ متعدد اقسام کے مضر صحت بیکٹیریا کے خاتمے کی صلاحیت رکھتے ہیں اور یوں انسانی جسم کو قدرتی طور پر بیماریوں کے خلاف مدافعت فراہم کرتے ہیں۔

ناریل کا تیل کھانا پکانے کیلئے بھی بہترین ہے کیونکہ اس کی آکسیڈیشن کی شرح دیگر کسی بھی قسم کے تیل کی نسبت کم ہوتی ہے۔ اس کا نقطہ پگھلاﺅ 25 ڈگری سینٹی گریڈ ہے، یعنی اس سے نیچے یہ نرم ٹھوس حالت میں ہوتا ہے جبکہ 25 ڈگری سینٹی گریڈ سے زیادہ درجہ حرارت پر یہ تیل کی حالت میں ہوتا ہے۔

ناریل کا تیل انسولین کے اخراج میں معاون ثابت ہوتا ہے اور یوں یہ بلڈ شوگر لیول کو کنٹرول کرتا ہے، یعنی ذیابیطس کے مریضوں کیلئے مفید ثابت ہوتا ہے۔ تھکاوٹ اور ذہنی دباﺅ سے نجات کیلئے بھی ناریل کا تیل بہت مفید ہے۔ اس میں موجود اینٹی آکسیڈنٹ اجزاءخاص طور پر دماغ کی صحت کیلئے مفید ثابت ہوتے ہیں۔

یہ تیل جسم میں وٹامن اور معدنیات کے انجذاب میں مدد فراہم کرتا ہے اور مختلف اقسام کے امینو ایسڈز فراہم کرکے معدے کے عمل او رنظام انہضام کو بہتر بناتا ہے۔ مختصر یہ کہ ہڈیوں میں کیلشیم اور میگنیشیم جذب کر کے انہیں مضبوط بنانے کی بات ہو یا نقصان دہ کولیسٹرول کو مفید کولیسٹرول بدل کر دل کی صحت کو بہتر کرنے کی بات، ناریل کا تیل ہر لحاظ سے نہایت مفید چیز ہے۔

About hakeem

Check Also

If you Eat Roasted Chana With Water Everyday then what will happens to your Body

Pait Kam Karne Ka Tarika For Reduce Belly Fat

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *